ٹی ایچ کیو ہسپتال چیچہ وطنی میں ڈائلسیز سینٹر کے ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت پر مریض خاتون جاں بحق

ٹی ایچ کیو ہسپتال چیچہ وطنی میں ڈائلسیز سینٹر کے ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت پر مریض خاتون جاں بحق
، ڈیوٹی ڈاکٹر اور ایم ایس ہسپتال موبائل بند کر کے ہسپتال سے غائب، مریضوں کا کوئی پرسان حال نہیں ، ایڑیاں رگڑ رگڑ کر مریض موت کے منہ میں جانے لگے۔یہ باتیں 54/2 کے رہائشی ارشاد الحق نے چیچہ وطنی پریس کلب میں احتجاجی پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتائیں۔ انہوں نے بتایا کہ میری اہلیہ سکینہ بی بی عرصہ ساڑھے چار سال سے کڈنی کے مرض میں مبتلا تھی جس کے ڈائلسیز چیچہ وطنی تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے ڈائلسیز سینٹر میں احسن طریقے سے ہو رہے تھے ، دوران ڈائلسیز طبعیت کے بگڑنے پر ڈاکٹر فوری طور پر علاج کرتے تھے لیکن
ایک ہفتہ قبل کڈنی کے واحد ڈاکٹر رانا بدر منیر کا تبادلہ ہونے کے بعد کڈنی کے مریضوں کا کوئی پرسان حال نہیں نرسیں ہی ڈائلسیز کر رہی ہیں جس کی وجہ سے مریضوں کی بہتر دیکھ بھال نہیں ہو رہی، جمعرات کے دن میری اہلیہ سکینہ بی بی کے ڈائلیسز ہو رہے تھے کہ دوران ڈائلسیز اس کی طبعیت اچانک خراب ہو گئی ، مگر وہاں کوئی ڈاکٹر موجود نہ تھا ، میں ایک گھنٹہ تک کبھی ڈاکٹر کے کمرے میں اور کبھی ایم ایس کے کمرے میں بھٹکتا رہا لیکن وہاں نہ کوئی ڈاکٹر ملا اور نہ ہی ایم ایس ملا اور ان کے موبائل بھی بند تھے۔با لآخر میری بیوی زندگی اور موت کی کشمکش میں رہنے کے بعد دم توڑ گئی، میری اعلیٰ حکام سے اپیل ہے کہ نا اہل ایم ایس ڈاکٹر شاہد رسول گریوال کو فوری طور پر معطل کر کے اس کی جگہ کوئی محنتی ایم ایس لگایا جائے اور ڈائلسیز وارڈ میں مستقل طور پرکڈنی ڈاکٹر تعینات کیا جائے۔ایم ایس ڈاکٹر سے جب اس معاملے پر ان کا موقف لینے کیلئے رابطہ کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ میرے علم میں ایسا کوئی واقعہ نہیں ہے ۔

Be the first to comment on "ٹی ایچ کیو ہسپتال چیچہ وطنی میں ڈائلسیز سینٹر کے ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت پر مریض خاتون جاں بحق"

Leave a comment

Your email address will not be published.


*